سعدوی عرب کی سپیشل ایمرجنسی فورس اور پولیس نے ان درجن بھر ایمرجنسی کالز کی چھان بین شروع کردی ہے جن میں کہا گیا ہے کہ القاعدہ سربراہ اسامہ بن لادن کو پانچ ساتھیوں سمیت گذشتہ شب دارالحکومت ریاض کے ایک لگژری ریسٹورنٹ سے کھانا کھاتے ہوئے دیکھا گیا ہے ایک امریکی اخبار نیوز ویب سائٹ کی رپورٹ کے مطابق القاعدہ کے سابق سربراہ اسامہ بن لادن کو گذشتہ شب سعودی عرب کے دارالحکومت ریاض کے لگژری فائیو سٹار ریسٹورنٹ الفیصلہ ہوٹل دی گلوب سے کھانا کھاتے ہوئے دیکھ کر ریسٹورنٹ میں موجود عینی شاہدین نے فوراًسعودی عرب کے محکمہ سپیشل ایمرجنسی فورس اور پولیس کو کئی درجن بھر کالیں موصول ہوئیں جن میں کہا گیا کہ القاعدہ کے سربراہ نے یہاں سے کھانا کھایا اور ان کے ہمراہ 5آدمی اور بھی تھے ۔ان کے کالز موصول ہونے کے بعد پولیس اور سپیشل ایمرجنسی فورس کے آفیسرز کو متعلقہ جگہ پر تحقیقات کیلئے بھیج دیا گیا ہے تاہم اسامہ اور ان کے ساتھی پہلے ہی عمارت چھوڑ چکے ہیں ریاض پولیس کے ترجمان کرنل فواز بن جمیل المیمن نے میڈیا کو بتایا کہ فی الحال ہمارے پاس ایسا کوئی ثبوت موجود نہیں کہ وہ شخص واقعہ اسامہ بن لادن ہی تھا ہم نے تحقیقات کا آگاز کردیا ہے تحقیقات کے بعد ان افواہوں کے بارے میں کسی حتمی نتیجے پر پہنچ سکیں گے ۔

Post a Comment